Poets

350+ Original Mirza Ghalib Poetry in Urdu | Ghalib Shayari

Original Mirza Ghalib Poetry

Authentic Mirza Ghalib Poetry in Urdu

کچھ تو پڑھیے کہ لوگ کہتے ہیں
آج غالب غزل سرا نہ ہوا

Kuch toh padhiyë ki log këhtë hain
Aaj ghalib ghazal-sara na hua.

تجھ سے قسمت میں میری صورت قفل ابجد
تھا لکھا بات کے بنتے ہی جدا ہو جانا

Tujh së qismat mëin mëri surat-ë-qufl-ë-abjad
Tha likha baat kë bantë hi juda ho jaana.

غالب خستہ کے بغیر کون سے کام بند ہیں
روئیے زار زار کیا کیجیے ہاے ہاے کیوں

Ghalib-ë-khasta kë baghair kaun së kaam band hain
Roiyë zaar zaar kya kijiyë haayë haayë kyun.

نہ ستایش کی تمنا نہ صلے کی پروا
گر نہیں ہیں میرے اشعار میں معنی نہ سہی

Na sataish ki tamanna na silë ki parva
Gar nahi hain mërë ashar mëin maani na sahi.

ہم کہاں کے دانا تھے کس ہنر میں یکتا تھے
بے سبب ہوا غالب دشمن آسماں اپنا

Hum kahan kë daana thë kis hunar mëin yakta thë
Bë-sabab hua ghalib dushman asman apna.

Original Mirza Ghalib Shayari in Urdu

ابن میریم ہوا کرے کوئی
میرے دکھ کی دوا کرے کوئی

Ibn-ë-maryam hua karë koi
Mërë dukh ki dava karë koi.

رہی نہ طاقت گفتار اور اگر ہو بھی
تو کس امید پہ کہیے کہ آرزو کیا ہے

Rahi na taqat-ë-guftar aur agar ho bhi
Toh kis umëëd pë kahiyë ki aarzu kya hai.

غم ہستی کا اسد کس سے ہو جز مرگ علاج
شمع ہر رنگ میں جلتی ہے سحر ہوتے تک

Gham-ë-hasti ka asad kis së ho juz marg ilaaj
Shama har rang mëin jalti hai sahar hotë tak.

ادھر وہ بد گمانی ہے ادھر یہ ناتوانی ہے
نہ پوچھا جائے ہے اس سے نہ بولا جائے ہے مجھ سے

Udhar woh bad-gumani hai idhar yë na-tavani hai
Na pucha jaayë hai us së na bola jaayë hai mujh së.

غالب نہ کر حضور میں تو بار بار عرض
ظاہر ہے تیرا حال سب ان پر کہے بغیر

Ghalib na kar huzur mëin tu baar baar arz
Zahir hai tëra haal sab un par kahë baghair.

Previous page 1 2 3 4 5 6 7 8 9 10 11 12 13 14 15 16 17 18 19 20 21 22 23 24 25 26 27 28 29 30 31 32Next page

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button