Poets

350+ Original Mirza Ghalib Poetry in Urdu | Ghalib Shayari

Original Mirza Ghalib Poetry

Urdu Mirza Ghalib Poetry

کاو کاو سخت جانی ہائے تنہائی نہ پوچھ
صبح کرنا شام کا لانا ہے جوئے شیر کا

Kaav kav-ë-sakht-jani hayë-tanhai na puch
Subh karna shaam ka laana hai ju-ë-shir ka.

سب کہاں کچھ لالہ و گل میں نمایاں ہو گئیں
خاک میں کیا صورتیں ہوں گی کہ پنہاں ہو گئیں

Sab kahan kuch lala-o-gul mëin numayan ho gayëin
Khaak mëin kya suratëin hongi ki pinhan ho gayëin.

ہے آدمی بجائے خود اک محشر خیال
ہم انجمن سمجھتے ہیں خلوت ہی کیوں نہ ہو

Hai aadmi bajaayë khud ëk mahshar-ë-khayaal
Hum anjuman samajhtë hain khalvat hi kyun na ho.

ایک ہنگامہ پہ موقوف ہے گھر کی رونق
نوحۂ غم ہی سہی نغمۂ شادی نہ سہی

Ëk hangamë pë mauquf hai ghar ki raunaq
Nauha-ë-gham hi sahi naghma-ë-shadi na sahi.

اس انجمن ناز کی کیا بات ہے غالب
ہم بھی گئے واں اور تیری تقدیر کو رو آئے

Us anjuman-ë-naz ki kya baat hai ghalib
Hum bhi gayë vaan aur tëri taqdir ko ro aayë.

Mirza Ghalib Poetry in English Urdu

چھوڑوں گا میں نہ اس بت کافر کا پوجنا
چھوڑے نہ خلق گو مجھے کافر کہے بغیر

Chhodunga main na us but-ë-kafir ka pujna
Chhodë na khalq go mujhë kafar kahë baghair.

جمع کرتے ہو کیوں رقیبوں کو
ایک تماشا ہوا گلہ نہ ہوا

Jama kartë ho kyun raqibon ko
Ëk tamasha hua gila na hua.

حد چاہئے سزا میں عقوبت کے واسطے
آخر گناہ گار ہوں کافر نہیں ہوں میں

Had chaahiyë saza mëin uqubat kë vastë
Akhir gunahgar hoon kafar nahi hoon main.

مدت ہوئی ہے یار کو مہماں کیے ہوے
جوش قدح سے بزم چراغاں کیے ہوے

Muddat hui hai yaar ko mëhman kiyë huë
Josh-ë-qadah së bazm charaagan kiyë huë.

سبزہ و گل کہاں سے آئے ہیں
ابر کیا چیز ہے ہوا کیا ہے

Sabza o gul kahan së aayë hain
Abr kya chëëz hai hava kya hai.

Previous page 1 2 3 4 5 6 7 8 9 10 11 12 13 14 15 16 17 18 19 20 21 22 23 24 25 26 27 28 29 30 31 32Next page

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button