Poets

350+ Original Mirza Ghalib Poetry in Urdu | Ghalib Shayari

Original Mirza Ghalib Poetry

Mirza Ghalib Famous Poetry

بو ئے گل نالۂ دل دود چراغ محفل
جو تیری بزم سے نکلا سو پریشاں نکلا

Bu-ë-gul nala-ë-dil dud-ë-charaag-ë-mahfil
Jo tëri bazm së nikla so parëshan nikla.

گھر میں تھا کیا کہ تیرا غم اسے غارت کرتا
وہ جو رکھتے تھے ہم ایک حسرت تعمیر سو ہے

Ghar mëin tha kya ki tëra gham usë gharat karta
Woh jo rakhtë thë hum ëk hasrat-ë-tamir so hai.

ایک ایک قطرہ کا مجھے دینا پڑا حساب
خون جگر ودیعت مژگان یار تھا

Ëk ëk qatrë ka mujhë dëina pada hisab
Khun-ë-jigar vadiat-ë-mizhgan-ë-yar tha.

بسکہ ہوں غالب اسیری میں بھی آتش زیر پا
مو ئے آتش دیدہ ہے حلقہ میری زنجیر کا

Bas-ki hoon ghalib asiri mëin bhi atish zër-ë-pa
Mu-ë-atish dëëda hai halqa mëri zanjir ka.

جو یہ کہے کہ ریختہ کیونکے ہو رشک فارسی
گفتۂ غالب ایک بار پڑھ کے اسے سنا کہ یوں

Jo yë kahë ki rëkhta kyunkë ho rashk-ë-farsi
Gufta-ë-ghalib ëk baar padh kë usë suna ki yoon.

Mirza Ghalib Poetry Pics in Urdu

ہر چند ہو مشاہدۂ حق کی گفتگو
بنتی نہیں ہے بادہ و ساغر کہے بغیر

Har-chand ho mushahida-ë-haq ki guftugu
Banti nahi hai bada-o-saghar kahë baghair.

اب جفا سے بھی ہیں محروم ہم اللہ اللہ
اس قدر دشمن ارباب وفا ہو جانا

Ab jafa së bhi hain mahrum hum allah allah
Is qadar dushman-ë-arbab-ë-wafa ho jaana.

کیوں کر اس بت سے رکھوں جان عزیز
کیا نہیں ہے مجھے ایمان عزیز

Kyunkar us but së rakhun jaan azëëz
Kya nahi hai mujhë iman azëëz.

جانتا ہوں ثواب طاعت و زہد
پر طبیعت ادھر نہیں آتی

Janta hoon savab-ë-taat-o-zohd
Par tabiat idhar nahi aati.

کیوں گردش مدام سے گھبرا نہ جائے دل
انسان ہوں پیالہ و ساغر نہیں ہوں میں

Kyun gardish-ë-mudam së ghabra na jaayë dil
Insaan hoon piyala o saghar nahi hoon main.

Previous page 1 2 3 4 5 6 7 8 9 10 11 12 13 14 15 16 17 18 19 20 21 22 23 24 25 26 27 28 29 30 31 32Next page

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button