Poets

350+ Original Mirza Ghalib Poetry in Urdu | Ghalib Shayari

Original Mirza Ghalib Poetry

Best Mirza Ghalib Shayari

چلتا ہوں تھوڑی دور ہر ایک تیزرو کے ساتھ
پہچانتا نہیں ہوں ابھی راہ بر کو میں

Chalta hoon thodi door har ëk tëz-rau kë saath
Pëhchanta nahi hoon abhi rëhbar ko main.

میں بھلا کب تھا سخن گوئی پہ مائل غالب
شعر نے کی یہ تمنا کے بنے فن میرا

Main bhala kab tha sukhan-goi pë maail ghalib
Shër në ki yë tamanna kë banë fan mëra.

بوسہ کیسا یہی غنیمت ہے
کہ نہ سمجھے وہ لذت دشنام

Bosa kaisa yahi ghanimat hai
Ki na samjhë woh lazzat-ë-dushnam.

خوب تھا پہلے سے ہوتے جو ہم اپنے بد خواہ
کہ بھلا چاہتے ہیں اور برا ہوتا ہے

Khoob tha pëhlë së hotë jo hum apnë bad-khvah
Ki bhala chahtë hain aur bura hota hai.

دل ہر قطرہ ہے ساز انا البحر
ہم اس کے ہیں ہمارا پوچھنا کیا

Dil-ë-har-qatra hai saz-ë-anal-bahar
Hum us kë hain humara puchna kya.

Top Mirza Ghalib Poetry in Urdu

لکھتے رہے جنوں کی حکایات خوں چکاں
ہر چند اس میں ہاتھ ہمارے قلم ہوئے

Likhtë rahë junun ki hikayat-ë-khun-chakan
Har-chand iss mëin haath humarë qalam huë.

گر تجھ کو ہے یقین اجابت دعا نہ مانگ
یعنی بغیر یک دل بے مدعا نہ مانگ

Gar tujh ko hai yaqin-ë-ijabat dua na maang
Yaani baghair-ë-yak-dil-ë-bë-muddaa na maang.

رو میں ہے رخش عمر کہاں دیکھیے تھمے
نے ہاتھ باگ پر ہے نہ پا ہے رکاب میں

Rau mëin hai rakhsh-ë-umar kahan dëkhiyë thamë
Në haath baag par hai na pa hai rikab mëin.

کام اس سے آ پڑا ہے کہ جس کا جہان میں
لیوے نہ کوئی نام ستمگر کہے بغیر

Kaam us së aa pada hai ki jis ka jahan mëin
Lëvë na koi naam sitam-gar kahë baghair.

پکڑے جاتے ہیں فرشتوں کے لکھے پر نا حق
آدمی کوئی ہمارا دم تحریر بھی تھا

Pakdë jaatë hain farishton kë likhë par na-haq
Aadmi koi humara dam-ë-tahrir bhi tha.

Previous page 1 2 3 4 5 6 7 8 9 10 11 12 13 14 15 16 17 18 19 20 21 22 23 24 25 26 27 28 29 30 31 32Next page

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button