Poets

350+ Original Mirza Ghalib Poetry in Urdu | Ghalib Shayari

Original Mirza Ghalib Poetry

Mirza Ghalib Sher in Urdu

حیراں ہوں دل کو روؤں کہ پیٹوں جگر کو میں
مقدور ہو تو ساتھ رکھوں نوحہ گر کو میں

Hairan hoon dil ko rooon ki pitun jigar ko main
Maqdur ho toh saath rakhun nauhagar ko main.

حضرت ناصح گر آویں دیدہ و دل فرش راہ
کوئی مجھ کو یہ تو سمجھا دو کہ سمجھائیں گے کیا

Hazrat-ë-nasëh gar aavëin dëëda o dil farsh-ë-rah
Koi mujh ko yë toh samjha do ki samjhayëngë kya.

بیٹھا ہے جو کہ سایۂ دیوار یار میں
فرماں رواۓ کشور ہندوستان ہے

Baitha hai jo ki saya-ë-divar-ë-yar mëin
Farman-rava-ë-kishvar-ë-hindustan hai.

دونوں جہان دے کے وہ سمجھے یہ خوش رہا
یاں آ پڑی یہ شرم کہ تکرار کیا کریں

Donon jahan dë kë woh samjhë yë khush raha
Yaan aa padi yë sharm ki takrar kya karëin.

صحبت میں غیر کی نہ پڑی ہو کہیں یہ خو
دینے لگا ہے بوسہ بغیر التجا کیے

Sohbat mëin ghair ki na padi ho kahin yë khu
Dënë laga hai bosa baghair iltija kiyë.

Mirza Ghalib Poetry in Urdu

محبت تھی چمن سے لیکن اب یہ بے دماغی ہے
کہ موج بوئے گل سے نایک میں آتا ہے دم میرا

Mohabbat thi chaman së lëkin ab yë bë-dimaagi hai
Ki mauj-ë-bu-ë-gul së naak mëin aata hai dam mëra.

عمر بھر کا تو نے پیمان وفا باندھا تو کیا
عمر کو بھی تو نہیں ہے پائیداری ہاے ہاے

Umar bhar ka tu në paiman-ë-wafa bandha toh kya
Umar ko bhi toh nahi hai payëdari haayë haayë.

شعر غالب کا نہیں وحی یہ تسلیم مگر
بخدا تم ہی بتا دو نہیں لگتا الہام

Shër ghalib ka nahi vahi yë taslim magar
Ba-khuda tum hi bata do nahi lagta ilham.

نظر لگے نہ کہیں اس کے دست و بازو کو
یہ لوگ کیوں میرے زخم جگر کو دیکھتے ہیں

Nazar lagë na kahin us kë dast-o-bazu ko
Yë log kyun mërë zakhm-ë-jigar ko dëkhtë hain.

مرتے مرتے دیکھنے کی آرزو رہ جائے گی
وائے نایکامی کہ اس کافر کا خنجر تیز ہے

Martë martë dëkhnë ki aarzu rëh jaayëgi
Vaayë nakami ki us kafir ka khanjar tëz hai.

Previous page 1 2 3 4 5 6 7 8 9 10 11 12 13 14 15 16 17 18 19 20 21 22 23 24 25 26 27 28 29 30 31 32Next page
Back to top button