Poetry

260+ Romantic Ankhain Poetry | آنکھیں | Urdu Poetry on Eyes

Best Ankhain Poetry on Eyes

ankhain poetry on eyes
Ankhain Poetry on Eyes in Urdu

کچھ لوگوں کی آنکھیں بہت خوبصورت ہوتی ہیں۔ آنکھیں جسم کا صرف ایک حصہ نہیں ہیں۔ ان میں ہزاروں خواب ، خواہشیں ، رشتےداروں کے لئے پیار اور نہ جانے کیا کیا ہوتا ہیں۔ جب بھی کسی کو پیار ہوتا ہے تو ہر ایک کا ساتھی چاہتا ہے کے وہ روز صبح انہی آنکھوں کو دیکھتے ہوئے اٹھے۔ یہی وجہ ہے کے Ankhain Poetry (آنکھیں پوٹری) لوگوں میں بہت مشہور ہے۔ بڑے سے بڑے شاعر Urdu Poetry on Eyes لکھتے ہیں اور اپنے ساتھی کی آنکھوں کی تعریف کرتے ہیں۔ جنہیں پڑھ کر ان کے شراکت دار سے بہت خوش ہوتے ہیں۔ اگر آپ بھی کسی سے پیار کرتے ہیں اور انہیں خوش کرنا چاہتے ہیں تو ان کو Aankhen Poetry بھیجیں۔ ہم پر یقین کریں وہ یے Eyes Poetry بہت پسند کریں گے۔

اب سوال یے پیدا ہوتا ہے کے اگر ہم Ankhain Poetry (آنکھیں پوٹری) لائے تو کہاں سےلائے۔ زیادہ تر شراکت دار ایسے ہوتے ہیں جو اپنے ساتھی کو پوٹری بھیجنا چاہتے ہیں لیکن خود لکھ نہیں پاتے ہیں اور اگر وہ انٹرنیٹ پر تلاش کریں تو بھی انہیں Urdu Poetry on Eyes نہیں مل پاتی ہیں۔ جس کی وجہ سے ان کے دل کی خواہشات دل میں ہی رہ جاتی ہے۔ اگر آپ بھی ایسے ہی لوگوں میں سے ہیں تو اب آپ کی خوشی صرف آپ کے دل میں نہیں رہے گی۔ ہم اس مضمون میں آپ کے لئے Khubsurat Aankhen Poetry کا ایک بہت ہی خاص مجموعہ لے کر آئے ہیں۔ جنہیں پڑھ کر آپکا دل خوش ہو جائے گا۔ ہم نے اس مضمون میں ہر طرح کی Urdu Poetry on Eyes دی ہے جو آپ اپنے ساتھی کے ساتھ شیر کرسکتے ہیں۔

آپ ذیل میں دئے گئے ذخیرے میں اپنے پسندیدہ یا اپنے ساتھی سے ملنے والی Ankhain Poetry (آنکھیں پوٹری) کا انتخاب کرسکتے ہیں اور اسے اپنے ساتھی کو پڑھ کر سنا سکتے ہیں۔ یقین کیجئے Urdu Poetry on Eyes سن کر وہ بہت خوش ہوںگے۔ کچھ لوگ ایسے بھی ہیں جو اپنے ساتھی کے سامنے پوٹری سنانے میں کچھ شرم محسوس کرتے ہیں۔ اگر آپ بھی ان لوگوں میں سے ایک ہیں تو گھبرائیں نہیں۔ آپ ان پوٹری کو سوشل میڈیا پلیٹ فارم پر بھی شیر کرسکتے ہیں۔

آج کل ہر شخص سوشل میڈیا پلیٹ فارم سے جڑا ہوا ہے۔ پھر چاہے وہ WhatsApp ، Facebook ، Twitter اور Instagram ہو۔ تمام لوگوں نے اپنے سوشل میڈیا پر اکاؤنٹس بنا رکھے ہیں۔ آپ کے شراکت داروں کے پاس کچھ سوشل میڈیا پلیٹ فارم بھی ہوگا۔ تو اب آپ کیا انتظار کر رہے ہیں؟ اس صفحے کو Scroll کریں اور اپنی پسندیدہ Urdu Poetry on Eyes (آنکھیں پوٹری) منتخب کریں اور اسے اپنے ساتھی کے ساتھ شیر کریں۔

Ankhain Poetry in Urdu

Ankhain Poetry

نہ جانے کیا کشش ہے اسکی مدہوش آنکھوں میں
نظر انداز جتنا بھی کرو نظر اسی پے جاتی ہے

Na jaanë kya kashish hai uski madhosh aankhon mëin
Nazar andaaz jitna bhi karo nazar usi pë jaati hai.

یے جو نظروں سے تم میرے دل پر وار کرتے ہو
کرتے توہ ظلم ہو مگر کمال کرتے ہو

Yëh jo nazron së tum mërë dil par waar kartë ho
Kartë toh zulm ho magar kamaal kartë ho.

ایک سی شوخی خدا نے دی ہے حسن و عشق کو
فرق بس اتنا ہے وہ آنکھوں میں ہے یے دل میں ہے

Ëk si shokhi khuda në di hai husn-o-ishq ko
Farq bas itna hai woh aankhon mëin hai yëh dil mëin hai.

کبھی بیٹھا کے سامنے پوچھیں گے تیری آنکھوں سے
کسنے سکھایا ہے انہیں ہر دل میں اتر جانا

Kabhi baitha kë saamnë puchëngë tëri aankhon së
Kisnë sikhaaya hai inhëin har dil mëin utar jaana.

اگر کچھ سیکھنا ہی ہے توہ آنکھوں کو پڑنا سیکھ لو
ورنہ لفظ کے مطلب توہ ہزاروں نکال لیتے ہے

Agar kuch sikhna hi hai toh aankhon ko padhna sëëkh lo
Warna lafz kë matlab toh hazaaron nikaal lëtë hai.

Urdu Poetry on Eyes

Urdu Poetry on Eyes

آنکھ سے دور نہ ہو دل سے اتر جائےگا
وقت کا کیا ہے گزرتا ہے گزر جائےگا

Aankh së door na ho dil së utar jayëga
Waqt ka kya hai guzarta hai guzar jayëga.

شاعری میں جو لکھے تھے لفظ سارے پھیکے سے تھے میرے
شایری توہ دراصل تیری ان آنکھوں میں تھی

Shayari mëin jo likhë thë lafz saarë fëëkë së thë mërë
Shayari toh darasal tëri un aankhon mëin thi.

قید خانے ہیں بن سلاخوں کے
کچھ یوں چرچے ہے تمہاری آنکھوں کے

Qaid khanë hai bin salakhon kë
Kuch yun charchë hai tumhari aankhon kë.

ساقی دیکھ زمانے نے کیسی تہمت لگایی ہے
آنکھیں تیری نشیلی ہے شرابی مجھے کہتے ہے

Saaqi dëkh zamanë në kaisi tohmat lagayi hai
Aankhën tëri nashëëli hai sharaabi mujhë këhtë hai.

مجھ سے کہتی تھی وہ شرابی آنکھیں
آپ وہ زہر مت پیا کیجئے

Mujhsë këhti thi woh sharabi aankhën
Aap woh zëhër mat piya kijiyë.

1 2 3 4 5 6 7 8Next page

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button