Poets

350+ Original Mirza Ghalib Poetry in Urdu | Ghalib Shayari

Original Mirza Ghalib Poetry

Mirza Ghalib Poetry Urdu
Mirza Ghalib Poetry in Urdu

Mirza Ghalib Poetry in Urdu

رحمت اگر قبول کرے کیا بعید ہے
شرمندگی سے عذر نہ کرنا گناہ کا

Rahmat agar qubool karë kya bayëëd hai
Sharmindagi së uzr na karna gunah ka.

آج ہم اپنی پریشانیٔ خاطر ان سے
کہنے جاتے تو ہیں پر دیکھیے کیا کہتے ہیں

Aaj hum apni parëshani-ë-khatir un së
Këhnë jaatë toh hain par dëkhiyë kya këhtë hain.

جب تک کہ نہ دیکھا تھا قد یار کا عالم
میں معتقد فتنۂ محشر نہ ہوا تھا

Jab tak ki na dëkha tha qad-ë-yar ka aalam
Main motaqid-ë-fitna-ë-mahshar na hua tha.

زباں پہ بار خدایا یہ کس کا نام آیا
کہ میرے نطق نے بوسے میری زباں کے لیے

Zaban pë bar-ë-khudaya yë kis ka naam aaya
Ki mërë nutq në bosë mëri zaban kë liyë.

کیوں نہ ٹھہریں ہدف ناوک بے داد کہ ہم
آپ اٹھا لیتے ہیں گر تیر خطا ہوتا ہے

Kyun na thahrëin hadaf-ë-navak-ë-bë-dad ki hum
Aap utha lëtë hain gar tëër khata hota hai.

Mirza Ghalib Shayari in Urdu

بساط عجز میں تھا ایک دل یک قطرہ خوں وہ بھی
سو رہتا ہے بہ انداز چکیدن سرنگوں وہ بھی

Bisat-ë-ijz mëin tha ëk dil yak qatra khoon woh bhi
So rëhta hai ba-andaz-ë-chakidan sar-nigun woh bhi.

دل میں ذوق وصل و یاد یار تک باقی نہیں
آگ اس گھر میں لگی ایسی کہ جو تھا جل گیا

Dil mëin zauq-ë-vasl o yad-ë-yar tak baaqi nahi
Aag iss ghar mëin lagi aisi ki jo tha jal gaya.

میں اور بزم مے سے یوں تشنہ کام آؤں
گر میں نے کی تھی توبہ ساقی کو کیا ہوا تھا

Main aur bazm-ë-mai së yoon tishna-kam aaoon
Gar main në ki thi tauba saaqi ko kya hua tha.

طاعت میں تا رہے نہ مے و انگبیں کی لاگ
دوزخ میں ڈال دو کوئی لے کر بہشت کو

Taat mëin ta rahë na mai-o-angbin ki laag
Dozakh mëin daal do koi lë kar bahisht ko.

کم نہیں جلوہ گری میں تیرے کوچے سے بہشت
یہی نقشہ ہے ولے اس قدر آباد نہیں

Kam nahi jalvagari mëin tërë kuchë së bahisht
Yahi naqsha hai valë iss qadar abad nahi.

1 2 3 4 5 6 7 8 9 10 11 12 13 14 15 16 17 18 19 20 21 22 23 24 25 26 27 28 29 30 31 32Next page

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button